sex arabic story must read – موبائل دوستی سے چدائی تک

Share

sex arabic story must read – موبائل دوستی سے چدائی تک  موبائل دوستی سے چدائی تک

میرا نام تنویر ہے اور میں کراچی کا رہنے والا ہوں جو کہانی میں آپکو سنانے جا رہا ہوں یہ ایک ایسے واقعہ پر مبنی ہے جو میرے ساتھ تقریبا دو سال پہلے پیش آیا

تو بات کچھ یوں ہے کہ دوسال پہلے جب میں آفس میں کمپیوٹر پر کام کر رہا تھا تو میرے موبائل پر گھنٹی بجی جب میں نے موبائل کی سکرین پر دیکھا تو اس پر کوئی انجان نمبر ڈسپلے ہو رہا تھا خیر میں نے کال اٹینڈ کی اور ہیلو کہا مگر دوسری طرف سے کوئی جواب نہ آیا۔ میرے کافی دفعہ ہیلو ہیلو کہنے پر بھی جب کوئی جواب نہ آیا تو میں نے کال کاٹ دی۔ میں دوبارہ اب پھر اپنے کام میں مصروف ہو گیا۔ کچھ دیر بعد پھر اسی نمبر سے میرے موبائل پر دوبارہ کال آئی اور میں نے دوبارہ کال رسیو کی تو موبائل پر دوبارہ وہی رسپونس ملا یعنی دوسری طرف سے کوئی بھی نہ بولا اور پھر کال کٹ گئی۔ اب میں اس طرح کی بار بار کال سے تنگ آ چکا تھا ایک طرف کام کا برڈن تھا اور دوسری طرف اس طرح کی بارر بار کالز۔ ابھی میں دل ہی دل میں کال کرنے والے کو بڑا بھلا کہہ رہا تھا کہ میرے موبائل کی دوبارہ گھنٹی بجی میں نے موبائل پر نمبر دیکھا تو دوبارہ پھر اسی نمبر سے کال آ رہی تھی اب کی بار میرا پارہ آسمان پر تھا اور میں نے جلدی سے کال اٹینڈ کی اور بس گالیاں نکالنے شروع کردیں۔ میں نے کال کرنے والے کو فون پر کہا بہن چود کیا گانڈ پروانی ہے جو بار بار فون کر رہا ہے تیر گانڈ پھاڑون ، تیری بہن کی کس، تیری بھدی میں لن ڈالوں میں اسی طرح موبائل پر بار بار تنگ کرنے والے کو گالیاں نکال رہا تھا اور جیسے ہی میں نے کال کرنے والے کو کہا کہ اگر میرا لن اتنا ہی پسند آ گیا ہے تو بہن چود منہ سے کیوں نہیں بولتا۔ تیری چدائی کی خواہش پوری کر دوں گا۔ ابھی میں نے یہ الفاظ کہے ہی تھے کہ دوسری طرف سے ایک نسوانی آواز سنائی دی تو کر دیں ناں خواہش پوری اور فون بند ہو گیا۔

اب فون کے بند ہوتے ہی سب سے پہلے میرا دھیان اپنے جاننے والوں کی طرف گیا کہ کیا یہ سب کوئی مزاق کر رہا ہے۔ کون ہو سکتا ہے۔ اب میرا دھیان کام کی بجائے اس فون کال کرنے والی کی طرف تھا خیر میں نے وہ نمبر اپنے موبائل میں سیو کر لیا۔ اب رات کو جب میں کھانا کھانے کے بعد اپنے کمرے میں سونے کے لیے آیا تو میں نے اسی نمبر پر کال کرنے کا سوچا کہ دیکھا جائے کہ کون ہے اور کیا چاہتا ہے۔ خیر میں بیڈ پر لیٹ گیا اور اسی نمبر پر کال ملا دی۔ اب اس نمبر پررنگ ہو رہی تھی مگر کسی نے بھی فون رسیو نہ کیا۔ میں نے دوسری بار دوبارہ کوشش کی۔ تو دوسری رنگ پر ہی فون رسیو ہو گیا۔ اور دوسری طرف سے کسی لڑکی نے ہیلو کون ؟ کہا تو میں نے کہا آپ کے اس نمبر سے صبح میرے اسی نمبر پر کافی کالز آ رہی تھیں کیا آپ بتا سکتی ہیں کہ آپ کون ہیں اور کیا چاہتی ہیں۔ تو اس لڑکی نے کہا کہ اس نمبر سے آپ کو کال کیسے آ سکتی ہے یہ نمبر تو میرے پاس ہی ہوتا ہے اور میں نے تو آپکو فون ہی نہیں کیا۔ تو میں نے کہا دیکھیں میڈم آپ کا نمبر میرے فون کی رسیوڈ کالز لسٹ میں ابھی تک سیو ہے مجھے بھلا آپ سے جھوٹ بولنے کی کیا ضرورت ہے۔ تو وہ لڑکی بولی اس کا مطلب ہے کہ میں آپ سے جھوٹ بول رہی ہوں تو میں نے کہا یہ تو مجھے نہیں پتا ہاں البتہ میں سچ بول رہا ہے میں بس اتنا جاتنا ہوں ۔ میرے اس جواب پر اس لڑکی نے کہا اچھا چلیں مان لیتے ہیں کہ صبح آپکو فون میں نے ہی کیا تھا اب بولیں کیا کریں گے آپ ؟ تو میں نے کہا میں نے آپکو فون نہیں کیا تھا فون آپ نے کیا تھا تو آب بولیں آپ کیا چاہتی ہیں۔ میرے اس سوال پر اس لڑکی نے مجھے ایسا جواب دیا جس کی میں امید بھی نہیں کر سکتا تھا یعنی میں نے ایسا سوچا بھی نہیں تھا کہ کوئی لڑکی ایسی بات کر سکتی ہے۔ اس لڑکی نے آپ بتائیں آپکو کیا چاہیئے کے جواب میں کہا کہ مجھے آپکا لن چاہیئے جس کا ۔ میں یہ جواب سن کر کچھ دیر خاموش ہو گیا۔ پھر وہ لڑکی دوبارہ مجھ سے مخاطب ہوئی اور بولی کہ صبح تو تم بڑے دعوے کر رہی تھے اب کیا ہوا۔ کیا وہ سب دعوے ہی تھے۔ لگتا ہے مردانگی ختم ہو گئی اور یہ کہنے کے بعد وہ لڑکی قہقہہ لگا کر ہنسی۔ میں نے کہا ایسی کوئی بات نہیں۔ میں نے آج تک کسی لڑکی کے ساتھ یہ سب نہیں کیا مگر مجھے اپنے آپ پر اتنا بھروسہ ہے کہ تمیں صبح میں تارے دکھلا دوں۔ یہ سن کر وہ لڑکی دوبارہ قہقہہ لگاکر ہنسی اور بولی اچھا تو دیکھ لیتے ہیں۔ میں نے اسے پوچھا بولو تم کہاں رہتی ہو تو اس نے کہا گھر میں ، یہ کہہ کر وہ پھر قہقہہ لگا کر ہنسی میں نے کہا جناب کا گھر کہاں ہے تو اس نے کہا یہ بات چھوڑو میں تمہیں کل فون کروں گی پھر دیکھتے ہیں کہاں ملنا ہے میں نے کہا ٹھیک ہے۔

بس اس لڑکی سے بات کرنی تھی کہ پوری رات مجھے نیند ہی نہ آئی پوری رات اس لڑکی کے بارے میں ہی سوچتا رہا میرا لن پوری رات کھڑا رہا صبح چار بجے جا کر آنکھ لگی اور خواب میں اسی لڑکی کے تصور کو چودتا رہا اور اسی دوران اختلام بھی ہو گیا۔

Share
Article By :

One thought on “sex arabic story must read – موبائل دوستی سے چدائی تک

  1. میں پاکستان سے ہوں. میرے اعداد و شمار بہت سیکسی ہے . کسی ایک وانا مجھے بھاڑ میں جاؤ .

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *