نندوئی نےچودا – Urdu font sex story

Share

[size=150:2xtx5h6v]
میرا نام رینو گپتا ہے , میری عمر 32 سال ہے , شادی کو 10 سال ھو گئی ہیں . آج مئی آپکو جو کہانی بتانےجا رہی ھوںوہ کہانی میرےنندوئی(پت کےبہنوئی)کی ہے , کہانی یاس طرح ہے , میرےشوہر صرف ایک بھائی بہن ہیں , بہن بری ہے اور میرےشوہر سے5 سال بڑی ہے , وہ دہلی ماےرہتی ہیں , وہ کافی کھبسورت ہے لیکن میرےنندوئی ان سے بھی خوبصورت ہیں , وہ تاگرےبدن کےسمارٹ مرد ہیں , وہ سوبھاو سےبھی کافی مجاکیا ہیں , میرا رشتہ تو ویسےبھی اُنکےساتھ ھنسی مزاک کا ہے یاس لئے وہ سبکےسامنےھی میرےساتھ ھنسی مزاک اور پیاری چیر – چار کیا کرتےہیں , لیکن دھیرےدھیرےمئی یہ محسوس کرنیلاگی کی جیجا جی یعنی کی میرےنندوئی کی جذبات میرےفی ٹھیک نہیںہے , کئی بار مئی اَکیلی ھوتی تو کبھی میری کمر پیر چکوٹی کاٹ لیتےیا کبھی میرےگلوںکو چوم لیتے , اُنکی یہ ھرکتیںمجھےبہت اَچی لگتی لیکن برا ماننےکا ڈرامہ کرتی , اُنکو من سےمنع کرنےکا تو سوال ھی نہیںاُٹھتا تھا , ایک بار ھولی ماےوہ ھمارےیہاںآمدنی ھوےتھے , ھولی تو ویسےبھی مستی کا تیؤہار ہے اور جیجا اور سہلاج کےدرمیان تو کافی کھل کیر ھولی ھوتی ہے , دلیا ھی ماحول میری سسرال ماےتھا , میری نند اور شوہر تو تھوری دیر رنگ کھیل کیر سکون بیٹھ گئی لیکن جیجاجی تو میرےپیچھےھی پر گئی , مجھےرنگوںسےدر لگتا ہے یاس لئیےنندوئی جی میرےاُوپر رنگ ڈالنےکےلییہ لپکے , ویسےھی مئی حصہ کیر اپنے کمرےماےچپ گئی اور درواجا بھڑا لیا , لیکن وہ کب ماننےوالےتھےجبردستی درواجا ٹھیل کیر اندر آ گئی اور مجھےاپنی بانہوںمئی دبوچ لیا , “جیجا جی , پلیج رنگ مت ”دالیےمےبولی “اَچ ٹھیک ہے , مئی رنگ نہیںڈالونگا , لیکن تمہےیاس طرح حصہ کر چھپنےکی سزا جرور ”دنگاججا جی بولےاور ایک بہن سےمجھےلاپتہ اور دوسرا ھانتھ میرےبلؤسےمیں گھسیڈ دییا , “جیجا جی مجھے”چوریہمےسیسکاری مسئلہ بولی , “پہلےتمہےٹھیک سےسجا تو دے ”دنوےبولےاور میری چوچیوںکو بری بیدردی سےمسلنےلگے , “جیجا جی پلیج چور دیجیہ کوئی دیکھ ”لیگامےکراہتےھوےبولی , “اُسسےکیا پھرک پرتا ہے , یاس گھر نین کسی کی ھیمت نہیںجو میرےآگے ”بولے , وہ ھنس کیر بولےاور پھر اُنہونےمیری ایک چوچی کو بری طرح نیچورا کی میںچیکھ اننگ , “جیجا جی میںآپکےھانتھ جورتی ھوںمجھےجانے”دیجیہمےدرخواست بھرےشاور مئی بولی , “ہانتھ جورنی کی جررت نہیں , پہلےایک وعدہ کرو تو جانے”دنگاججا جی بولے , “کیسا ”وادمینی پچا “رات کو چھت والےکمرےمئی آاوگی , وعدہ ”کرووےبولی “ایسا کیسےھو سکتا ہے , اگر کسی نےدیکھ لیا ”تومینی کہا , “اُسکی فکر مت کرو , اگر کوئی جاگ گیا تو میںبہانا بنا دونگا میری تبیت خراب تھی اور مینےدواء مسئلہ بلایا تھا , ” جیجا جی بولےجلدی سےوعدہ کرو , یہ کہتےوقت جیجا جی میرےدونوںنپلوںکو اپنے دونوںھانتھوںکی اُنگلییوںسےیاس طرح مسل رہےتھےکی میری جان ھلک میںآ گئی تھی , ئیاَسسےبچانےکا ایک ھی طریقہ تھا اور وہ یہ کی میںاُنکی بات مان لوں , آخر مجبور ھوکر وہی کرنا پرا , “ویری گڈ , یہ سب لوگ کھانا کھا کیر جلدی سو جاتےہیں , میںرات 10 بجے تمہراانتجار ”کرنگاوہ چوچی مسلتےھوےبولے , مینےسیر ھلا دیا اور چپ چاپ کمرےسےباہر کیکل گئی , رات میں10 بجے کےبعد جب سب لوگ سو گئی میںدبےپوںاُس کمرےمیںپہنچ گئی جسمےمیرےنندوئی ٹیکےتھے , وہ میرا ھیانتجار کیر رہےتھے , جیسےھی میںکمرےمیںپہنچی اُنہونےدرواجا بند کیر دییا اور لیگت بھی بند کیر دی , مجھےیاس وقت آجیب سی سیہرن ھو رہی تھی , جو کی اَشوابھاویک نہیںتھا مئی سمجھتی ھوںکی کوئی بھی عورت جب کسی پرےمرد کےپاس جاتی ھوگی تو اُسکےجسم میںیاس طرح کی سیہرن جرور ھوتی ھوگی , کمرا بند کرےکےبعد جیجا جی نےبنا وقت گنوائیےاپنے اور میرےسارےکپرےاُتار دئی , آپ جانتےہیں کی مئی کتنی بے- شرم عورت ھوںپھائی بھی مجھےتھوری شرم آ رہی تھی , ئیاَسکا باعث جیجا جی کےسامنےننگا ھنی کا پہلا اَواشر تھا , چونک کمرےماےدھپ اَندھیرا تھا یاس لئے اپنے ننگیپن کو مسئلہ مجھےزیادہ پریشانی ھاہی ہوئی , میری پریشانی تو در – اَشال اُس وقت سر ہوئی جب جیجا جی نےمیرےحصوں کو سہلانا اور دبانا سر کیا , اُنکی ھرکت ئیاَتنی مادک تھی کی مئی اپنے آپ کو بھول گئی اور ان سے کاس کیر لیپٹ گئی , میرےگلےسےسیتکاریںپھوٹنےلگی تھی , میںدونوںھانتھوںسےجیجا کےپورےبدن پیر چیکوتییاںکاٹ رہی تھی , مجھےاپنے ھٹٹےکاٹھی بدن والےنندوئی سےلیپٹ کر کچھ الگ ھی طرح کا فرحت مل رہا تھا , جیجا جی کےپورےبدن پیر چھوٹے ھی چھوٹے تھےاور اُنکا کھدرا بدن میرےچیکنےبدن میںاُتتیجنا کی لہر پیدا کیر رہا تھا ,[/size:2xtx5h6v]

Share
Posted in Uncategorized
Article By :

Leave a Reply